ads by google

Student Protests Continue in Different Cities of Pakistan

Student Protests Continue in Different Cities of Pakistan

Student protests continue in different cities of Pakistan
Students demand that the examinations will be postponed till the completion of the course.Police have also arrested students who demonstrate In different cities.

According to Pak Study correspondent, today protests took place in Sialkot, Islamabad, Swat, Rawalpindi, Lahore, Multan, Bhakkar, Dera Ismail Khan and sheikhupura.

Today in Multan During protest, clashes between the students and police, Multan police have arrested many students of different colleges of Multan.

One of the protesting female students told the Pak Study correspondent that our classes were online so our exams should also be online or we should take board exams after being given the opportunity to study in classes in schools / colleges.

Videos on social media show protesting students chanting slogans against the decision to take immediate exams.
And they carry placards with slogans such as “On the classroom zoom, so why in the exam room?”

Student organizations missing
According to reports so far, these demonstrations are being carried out by students individually. Various student organizations across Pakistan have maintained a mysterious silence in this regard. No major student organization, including the Muttahida Talba Mahaz, the largest student union coalition, has spoken out in favor of the students.
Only a few members of Anjuman-e-Talaba-e-Islam have worked on social media on this issue

A large number of students in Pakistan are active on social media on this issue, and for the past several days, the hashtag “Cancel Board Exam” has been trending on social media.

What is your opinion? Is the demand of the students that the examinations be postponed till the completion of the course correct? Please give your opinion below

پاکستان کے مختلف شہروں میں طالب علموں کے احتجاجی مظاہرے جاری
طلبہ کا مطالبہ ہے کہ کورس مکمل ہونے تک امتحانات کوملتوی کیا جائے
مختلف شہروں میں پولیس نے مظاہرہ کرنے والے طالب علموں کو گرفتار بھی کیا ہے

نمائندہ پاک اسٹڈی کی مطابق ، سیالکوٹ ،اسلام آباد، سوات، روالپنڈی، لاہور، ملتان ، بھکر، ڈیرہ اسماعیل خان، شیخورہ میں آج احتجاجی مظاہرے ہوئے،ملتان میں آج کے اس احتجاج کے دوران طلبہ اور پولیس کے درمیان جھڑپیں بھی ہوئیں جن کے بعد پولیس نے متعدد طلبہ کو حراست میں لے لیا ہے۔

احتجاج میں شامل ایک طالبہ نے نمائندہ پاک اسٹڈی کو بتایا ہماری کلاسیں آن لائن ہوئیں اس لیے ہمارے امتحان بھی آن لائن ہونے چاہیے یا پھر ہمیں سکولوں/کالجز میں کلاسز میں تعلیم کا موقع دیے جانے کے بعد بورڈ کے امتحان لیے جائیں۔

سوشل میڈیا پر چلنے والی ویڈیوز میں دیکھا جا سکتا ہے کہ احتجاج میں شامل طلبہ فوری امتحان کے فیصلے کے خلاف نعرے بازی کر رہے ہیں
اور انھوں نے پلے کارڈز اٹھائے رکھے ہیں جن پر ’کلاس زوم پر، تو امتحان روم میں کیوں؟‘ جیسے نعرے بھی درج ہیں۔

طلبہ تنظیمیں غائب

ابھی تک کی اطلاعات کے مطابق یہ مظاہرے طالب علم انفرادی طور پر کررہے ہیں، پاکستان بھر میں مختلف طلبہ تنظیموں نے اس سلسلہ میں پراسرار خاموشی اختیار کررکھی ہے ۔ طلبہ یونین کے سب سے بڑے اتحاد ’’متحدہ طلبہ محاذ‘‘ سمیت کسی بھی بڑی طلبہ تنظیم نے طلبہ کے حق میں موثر آواز بلند نہیں کی۔صرف انجمن طلبہ اسلام کے کچھ افراد نے اس مسئلہ پر سوشل میڈیا پر کام کیا ہے

پاکستان میں طلبہ و طالبات کی بڑی تعداد اس مسئلہ پر سوشل میڈیا پر متحرک ہے ، اور گذشتہ کئی دنوں سے سوشل میڈیا پر ’’کینسل بورڈ ایگزم‘‘ ہیش ٹیگ ٹرینڈ کر رہا ہے

آپ کی کیا رائے ہے کیا طالب علموں کا مطالبہ درست ہے کہ امتحانات کو کورس مکمل ہونے تک ملتوی کردیا جائے ۔ براہ کرم اپنی رائے نیچے ضرور دیں

ads by google

1 Comment

  1. yes Students demand that the exam postponed till the completion of the course
    I agree with the students’ demand

Leave a Reply

Your email address will not be published.


*