کوہاْٹ کا رہائشی طالب علم صفی اللہ ہلاک

پشاور: 13 جون: پشاور خیبر سپر مارکیٹ بم دھماکہ میں شہید ہونے والے کوہاٹ کے رہائشی طالب علم صفی اللہ کو آبائی علاقہ میں سپرد خاک کر دیا گیا ہے۔ شہید صفی اللہ آٹھ بہن بھائیوں میں سب سے چھوٹا اور والدین کا لاڈلہ بیٹا تھا۔ شہید کی د ماہ قبل شادی ہوئی تھی اور یونیورسٹی آف پشاور کے بی سی ایس کا طالب علم تھا ۔ نماز جنازہ کوہاٹ کے علاقہ نصرت خیل کے قومی مقبرہ میں ادا کر دی گئی۔ شدت غم سے نڈھال والدین اور نئی نویلی دلہن پر غشی کے دورے پڑتے رہے۔ 21 سالہ صفی اللہ کے افسر بننے کا خواب دل میں ادھورا رہ گیا۔ شہید صفی اللہ کی رسم قل بروز منگل اس کے آبائی گاوں نصرت خیل میں ادا کی جائے گی۔ تابع اللہ ولد عنایت اللہ سکنہ داروڑہ پشاور میں ایک پرائیویٹ کمپنی میں سافٹ ویئر انجینئر تھا۔ اس کی میت آبائی گاوں چانگل داروڑہ میں سپرد خاک کر دی گئی۔ اس کا دوسرا بھائی عبید اللہ سیکنڈ ایئر کا طالب علم تھا جو دھماکہ میں زخمی ہو گیا۔ اس کی حالت خطرے سے باہر ہے۔ پشاور بم دھماکے میں رستم کے علاقے تاشقند میں 22 سالہ طالب علم بھی زندگی سے منہ موڑ گیا۔ پرائیویٹ کالج کے ڈی اے ٹی کا طالب علم نصر اللہ ولد غفور گل پہلے دھماکہ کی آواز سن کر ساتھیوں سمیت جائے وقوعہ پر پہنچا۔ اس دوران دوسرا دھماکہ ہوا جس کا شکار ہو کر وہ موت کی آغوش میں چلا گیا ۔نصر اللہ کو آبائی گاوں تاشقند میں سپرد خاک کر دیا گیا۔ خیبر سپر مارکیٹ پشاور بم دھماکوں میں قائداعظم ماڈل سکول صوابی کے جماعت دہم کا طالب علم شہاب انور ولد خورشید انور منیجر حبیب بنک بٹ خیلہ ساکن شاہ نور پل تخت بھائی بھی شہید ہو گیا۔ شہید کا بڑا بھائی بلال انور ایڈورڈز کالج پشاور میں انجینئرنگ کا طالب علم ہے۔ دھماکے میں شدید زخمی ہوا۔ شہاب انور سکول میں موسم گرما کی تعطیلات ہونے کی وجہ سے اپنے بڑے بھائی بلال انور کے پاس ٹیوشن پڑھنے کے لئے ہفتے کے روز پشاور گیا۔ شہاب انوراپنے تین بھائیوں اور دو بہنوں میں سب سے چھوٹا تھا۔ بلال انور نے زخمی ہونے کے بعد اپنے گھر فون کر کے اطلاع دی جس پر لواحقین نے شہید کی لاش گھر پہنچا دی۔ دھماکے میں مردان کے نواحی علاقے گڑھی کپورہ کا طالب علم شاہ زیب بھی جاں بحق ہوا۔ شاہ زیب پرسٹن یونیورسٹی پشاور میں ایم بی اے فائنل ایئر کا طالب علم تھا اور خیبر سپر مارکیٹ میں واقع ایک پرائیویٹ ہاسٹل میں مقیم تھا۔ گزتہ رات جب پہلا دھماکہ ہوا تو وہ دوسرے لوگوں کے ساتھ امدادی کاموں میں مصروف ہو گیا کہ اسی اثناء میں دوسرا دھماکہ ہوا جس کی زد میں آ کر وہ زندگی سے ہاتھ دھو بیٹھا۔ مرحوم سابق ڈی ایس پی شاد علی خان کے نواسے یو اے ای کے شپنگ ڈائریکٹر عالمزیب خان کے صاحب زادے راحت علی خان وصال خان کے بھتیجے اور عبدالصمد خان کے بھانجے تھے۔ شاہ زیب کو اتوار کی شام گڑھی اسماعیل خان زئی میں سپرد خاک کر دیا گیا۔

شکریہ مشرق اہم خبریں

More News

Title Post date
Bannu Board announces HSSC Results 6 hours 4 min
Federal Urdu University seeks FIA help... 6 hours 38 min
National Book Foundation to Translate UN... 6 hours 40 min
AIOU to Check sale of Solved assignments 6 hours 42 min
Workshop organised at RIS 6 hours 43 min
International Islamic University Changes... 6 hours 45 min
Pakistan Facing Gender Gaps in Education... 6 hours 47 min
KP CM Chairs First BoD Meeting of KP-... 1 day 6 hours
Pak and French natural history museums... 1 day 6 hours
PMDC Decided to Register Degrees of 700... 2 days 1 hour
Teachers seek Payment of Dues for Exams... 2 days 2 hours
Jinnah College for Women clinches top 3... 2 days 2 hours
Cadet College Swat clinches tops... 2 days 2 hours
Pakistani Students Excel at Beijing... 2 days 2 hours
Bahria University Educating Street... 2 days 2 hours
Girls clinch top positions in Mardan... 3 days 5 hours
Voucher scheme soon for poor children’s... 3 days 5 hours
Voucher scheme soon for poor children’s... 3 days 5 hours
Teachers, writers protest Israeli... 3 days 5 hours
British HC issues Visa Guidelines for... 3 days 6 hours
The Contribution of the Arabs to... 3 days 6 hours
Tribal Students seek Raise in... 4 days 7 hours
Roots Millennium Schools Students attend... 4 days 7 hours
Lack of hostels in federal Colleges... 4 days 7 hours
RIS Graduates Doing Internships 4 days 7 hours
Mobile Book Van’ Handed Over to National... 4 days 7 hours
UoP to Introduce own Testing service for... 4 days 7 hours
IDPs Living in Government Schools 4 days 7 hours
SZAB Medical University all set to... 5 days 8 hours
Sports Diary: Question mark on probe... 6 days 6 hours